چند حیرت انگیز پرندے اور طوطے

پرندہ اور موسیقی کی آواز۔۔۔!!

پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے بعض علاقوں میں ایک ایسا پرندہ پایا جاتا ہے جس کا نام سر باس ہے  ۔ اس کی چونچ میں بارہ سوراخ ہوتے ہیں ، جس وقت وہ سانس لیتا ہے تو ہوا اس کی چونچ کے سوراخوں میں اس طرح داخل ہوتی ہے کہ ایک دل کش موسیقی کی آواز پیدا ہوتی ہے ۔ اس کو سن کر کئی چھوٹے پرندے اس کے پاس جمع ہو جاتے ہیں اور وہ انہیں سیر ہو کر کھاتا ہے ۔

٭شرابی طوطا۔۔۔۔!!

برطانیہ کے ایک علاقہ ایلمانڈسبری کے گھوڑوں کے ایک اصطبل کے مالک برائین پالمر کا پالتو طوطا جب تک روزانہ شراب سے بھرا ہوا پورا گلاس پی نہ لے ، اسے چین نہیں آتا ۔ اس کا نام کوکو ہے ۔ دو سال پہلے کوکو بیمار ہوا اور ڈاکٹر نے اسے خواب آور دوائی استعمال کروائی اور اب کوکو مکمل شرابی بن چکا ہے ۔ اور شراب نہ ملنے کی صورت میں کاٹ کھانے کو دوڑتا ہے ۔

٭حیرت انگیز اور منفرد ذہن رکھنے والا طوطا۔۔۔۔!!

امریکہ میں ایک ایسا طوطا موجود ہے جو حیرت انگیز طور پر منفرد ذہن رکھتا ہے ۔ وہ رٹی رٹائی باتیں نہیں کرتا ، بلکہ ہر سوال کا خوب سوچ سمجھ کر جواب دیتا ہے ۔ اس طوطے کا نام اپلیکس ہے ۔ یہ رنگوں اور چھوٹی بڑی چیزوں میں تمیز کر سکتا ہے ۔ وہ تکون ، مربع اور مستطیل اور دوسری مختلف شکلوں میں بھی فرق بتا دیتا ہے ۔ اپلیکس امریکی لہجے میں انگریزی بولتا ہے ۔ اسے اگر نیلا ڈبہ اور نیلی چابی دکھائی جائے اور پوچھا جائے کہ ان میں کیا مماثلت ہے تو وہ بتائے گا کہ یہ دونوں نیلے ہیں ۔

٭سب سے چھوٹا پرندہ۔۔۔!!

دنیا کا سب سے چھوٹا پرندہ کیوبا کے جنگلوں میں پایا جاتا ہے ۔ یہ پرندہ بہت ہی نایاب ہے اس کا وزن تقریباً دو گرام ہے اسے ہیمنگ دے برڈ کے نام سے پکارا جاتا ہے ۔ یہ بہت جنگ جو نسل سمجھی جاتی ہے ۔ اس لیے انہیں جنگ جو دیوتا کا نام دیا گیا ہے اگر نر کو یہ خبر ہو جائے کہ اس کی مادہ مخصوص شاخ پر بیٹھی ہے تو وہ فوراً اس سے ج نگ کرنے کے لیے تیار ہو جاتا ہے ۔

٭اپنے گھونسلے میں روشنی رکھنے والا پرندہ۔۔۔!!

بیاّ ایک ایسا حیرت انگیز پرندہ ہے جو اپنے گھر میں روشنی کیے رکھتا ہے ۔ یہ پرندہ فلپائن تک محدود ہے ۔ اس کے گھونسلے میں کبھی تاریکی نہیں ہوتی ، کیونکہ وہ ہمیشہ جگنو کی تاک میں رہتا ہے ۔جوں ہی کوئی جگنو اس کی گرفت میں آتا ہے ، وہ اسے گھر لے آتا ہے ۔ یہ اپنے گھونسلے میں تنکوں سے کچھ اس طرح تانا بانا بنتا ہے کہ جگنو باوجود کوشش کے اس جال کی گرفت سے نہیں نکل سکتا ۔ اس طرح کئی جگنو اس کی جھونپڑی کی زینت بن جاتے ہیں اور یہ ان کی جگمگ کرتی ٹھنڈی روشنیوں کے نیچے پڑا سویا رہتا ہے ۔