چیونٹیوں کے متعلق وہ باتیں جو شاید آپ کو نہیں معلوم

چیونٹی ایک ننھا سا کیڑا ہے ایک انچ کے 25 ویں حصے کے برابراس کا جسم ہے ۔ انسانی وزن کے دس لاکھ حصے سے بھی کم وزن رکھتی ہے ۔چیونٹی کا شمار کرہ ارض کی ذہین ترین مخلوق میں کیا جاتا ہے ۔یہ دنیا کے تمام ممالک میں پائی جاتی ہے ۔کرہ ارض پر موجود اگر تمام چیونٹیوں کا وزن کیا جائے تو یہ دس ارب کلو بنے گا ۔یہ دنیا میں موجود جانوروں کی کل تعداد کا دس فی صد ہیں ۔طویل تحقیق کے بعد اب تک چیونٹیوں کی 9 ہزار 5 سو اقسام دریافت ہو چکی ہیں ۔

چیونٹیوں کی زندگی بہترین نظم و ضبط اور اعلیٰ تہذیب کا نمونہ ہے یہ انسانوں کی طرح ایک مکمل ترقی یافتہ شہر آباد کرتی ہیں ۔مختلف چیونٹیاں مختلف کام انجام دیتی ہیں ۔ان کی آبادی میں ایک چیونٹی ملکہ ہوتی ہے ۔یہ سب کی نگرانی کرتی ہے ۔اور انہیں اچھے برے کاموں سے با خبر کرتی ہے ۔قرآن مجید میں حضرت سلیمان علیہ السلام کے قصے میں چیونٹی کا ذکر موجود ہے ۔

ملکہ چیونٹی اپنے حکمرانی کے فرائض انجام دیتی ہے ۔یہ اپنے خاص کمرے میں رہتی ہے ۔باقی چیونٹیاں اس کی خدمت میں مصروف رہتی ہیں ۔بادشاہ چیونٹا صرف نام کا بادشاہ ہوتا ہے ۔حکومت کے کاموں میں اس کا کوئی عمل دخل نہیں ہوتا ۔ملکہ چیونٹی جسامت میں عام چیونٹی سے بڑی ہوتی ہے ۔

یہ اپنی پوری زندگی میں بہت بڑی تعداد میں انڈے دیتی ہے ۔ان انڈوں کو شاہی خادمائیں اٹھا کر خاص کمروں میں لے جاتی ہیں ۔چیونٹیوں کی ذہانت کا اندازہ اس بات سے لگایا جا سکتا ہے کہ وہ ان انڈوں کو خاص درجہ حرارت میں رکھتی ہیں یہ درجہ حرارت انڈوں کے لیے بہت ضروری ہے ۔