دوستی کن لوگوں سے نہیں کرنی چاہئے۔۔۔

حضرت جعفر صادق رحمہ اللہ فرماتے ہیں کہ میرے والد حضرت باقر رحمہ اللہ نے مجھے پانچ نصیحتیں کیں ۔:

“بیٹا ! پانچ لوگوں سے دوستی نہ کرنا بلکہ اگر کہیں راستے میں چل رہے ہوں تو ان کے ساتھ مل کر بھی نہ چلنا وہ بے حد خطرناک ہوتے ہیں ۔”

میں نے پوچھا : ابا جان ! کون لوگ ؟ تو انہوں نے فرمایا:

جھوٹے سے دوستی نہ کرنا ۔ اس لیے کہ وہ دور کو قریب اور قریب کو دور دکھائے گااور تمہیں دھوکہ میں رکھے گا۔

میں نے پوچھا دوسرا کون ہے ؟ فرمانے لگے :تم کسی بخیل سے دوستی نہ کرنا ، کیونکہ وہ تمہیں اس وقت چھوڑ دے گا جس وقت تمہیں اس کی بہت زیادہ ضرورت ہو گی اور وہ دھوکہ دے گا ،اس لیے اس سے بھی دوستی نہ کرنا ۔

میں نے پوچھا : تیسرا کون ہے ؟ فرمانے لگے : فاسق و فاجر سے دوستی نہ کرنا یعنی جو اللہ تعالیٰ کے حکموں کو توڑنے والا ہو کیونکہ وہ تمہیں ایک روٹی کے بدلے میں بیچ ڈالے گا بلکہ ایک روٹی سے بھی کم میں ۔

پوچھا : ابا جان ! ایک روٹی کے بدلے میں بیچنے کی بات تو سمجھ میں آتی ہے لیکن ایک روٹی سے کم کے بدلے میں کیسے بیچے گا ؟ فرمایا: بیٹے وہ ایک روٹی کی امید پر تمہارا سودا کر لے گا اور تمہیں بھاؤ کا پتہ بھی نہیں چلنے دے گا ۔

پھر فرمایا : بے وقوف سے دوستی نہ کرنا ۔اس لیے کہ وہ تمہیں نفع پہنچانا چاہے گا مگر نقصان پہنچا دے گا ۔

میں نے پوچھا : پانچواں کون ہے ؟ فرمایا: رشتے ناطے توڑنے والا ۔