سمارٹ اور صحت مند رہنے کے لیے دالیں کھائیں ۔۔۔

<p>دالیں شوگر کے مریضوں کےلیے خصوصی طور پر مفید ہیں ان سے خون میں شکر کی سطح نارمل رہتی ہے۔دنیا بھر میں دالوں کا شمار صحت مند ترین کھانوں میں ہوتا ہے ۔چونکہ آج کل اکثر خوتین ملازمت پیشہ ہیں اورانہیں عموماً کوکنگ کے لیے وقت نہیں ملتا چناچہ چند برسوں سے ایسے کھانے جو جلدی سے بن جائیں اور صحت کے لے بھی مفید ہوں ہر فیملی کی ضرورت بنتے جارہے ہیں۔دال ایسی ڈش ہے جو بہت جلد تیار ہوجاتی ہے ۔اورقدرتی طور پر بے پناہ غذائت کی حامل ہوتی ہے حتیٰ کہ اسے گوشت کا متبادل قرار دیا جاتا ہے ۔کیونکہ یہ نباتاتی پروٹین کا اہم ترین ذریعہ ہے ۔
دالوں میں موجود فائبر،وٹامن اور منرلز کی وجہ سے انہیں دل کی صحت کے لیے بہترین قرار دیا جاتا ہے ۔دالوں میں folateاور magnesiumپائے جاتے ہیں۔Magnesium کی کمی سے دل کی بیماری کا خطرہ بڑھ جاتا ہے ۔اس لیے دالوں کے استعمال سے اس صورتِ حال سے بچا جاسکتا ہے ۔
دالوں میں موجود فائبر کی وجہ سے خون میں کولیسٹرول لیول کم ہوتا ہے ۔
کولیسٹرول لیول نارمل رکھنا ہر صحت مند انسان کے لیے ضروری ہے ۔لیکن شوگر کے مریضوں میں خاص طور پر کولیسٹرول کو قابو میں رکھنا لازمی ہے کیونکہ ذیابطیس میں ویسے ہی خون میں شوگر کے زیادہ ہونے سے خون کی نالیوں کی صحت متاثر ہوتی ہے ۔
زیادہ گوشت کھانا آنتوں کی صحت کے لے مضر ہے ۔اس سے بعض اوقات آنتوں کے کینسر کا خطرہ بڑھ جاتا ہے ۔پھل ،سبزیاں اور بالخصوص دالیں کھانے سے صحت بہتر رہتی ہے اور ان میں کینسر کا خطرہ کم ہوجاتا ہے ۔
دالیں کھانے سے قبض کی شکایت بھی دور ہوتی ہے ۔
دالیں شوگر کے مریضوں کے لیے بہترین غذا ہیں ۔ہمارے ہاں دال چاول اکثر لوگوں کی پسندیدہ خوراک ہیں تا ہم سفید چاولوں کے مقابلے میں براؤن چاول زیادہ بہتر ہیں۔شوگر کے مریضوں کو چاولوں میں دال ڈال کر کھانے کی بجائے دال میں تھوڑے سے چاول شامل کر کے کھانے چاہیے۔
دالوں میں پروٹین بڑی مقدار میں ہوتی ہے ۔کئی دالوں کو ملا کر بھی پکایا جاسکتا ہے ۔دالوں کو ملا کر پکایا جائے تو ان میں سے بعض ایسے essnetial amino acid ملتے ہیں جو صحت کےلیے بے انتہاء مفید ہیں ۔حلیم میں اگر ٹونا مچھلی یا مرغی کا گوشت ڈال لیا جائے تو یہ گائے کے گوشت سے بہتر ہے ۔
دالوں میں آئرن بھی کافی مقدار میں موجود ہوتا ہے ۔اپنے روز مرہ خوراک میں دالیں ضرور شامل کریں۔خواتین کو دالیں ضرور کھانی چاہیے کیونکہ ان میں آئرن کی کمی کی وجہ سے خون کی کمی کی بیمار ی بہت عام ہے۔
اگر آپ وزن کم کرنے کی کوشش کر رہی ہیں تو پھلوں اور سبزیوں کے ساتھ ساتھ دالوں کو بھی اپنی خوراک کا حصہ بنائیں ۔کیونکہ دالوں میں چکنائی بھی نہ ہونے کے برابر ہوتی ہے ۔مثلاً ایک کپ پکی ہوئی دال میں صرف دو سو تیس کیلوریز ہوتی ہیں ۔</p>

<h3>…کینیڈا میں ہونے والی ایک تحقیق کے مطابق</h3>
<p>کینیڈا میں ہونے والی ایک تحقیق کے مطابق دالوں کا استعمال بلڈ پریشر کو خطرناک حد تک بڑھنے سے روکتا ہے ۔ماہرین کا کہنا ہے کہ دالیں انسانی خون کو صاف کرنے مین اہم کردار ادا کرتی ہیں ۔سبھی دالیں آئرن کا خزانہ ہیں ۔
ایک پلیٹ دال روزانہ کھانے سے مطلوبہ خوراک کا37 فیصد آئرن حاصل ہوتاہے ۔اور دالون کا ایک بڑا فائدہ یہ ہے کہ اہ کہ یہ ہمارے muscles کو مضبوط بناتی ہے۔</p>
<p></p>