نوکیا ایکس – منفرد مگر کیوں؟

نوکیا  ایکس ایک منفرد فون ہے  اور جو چیز اسے دوسروں سے الگ کرتی ہے وہ ہے اسکا آپریٹنگ سسٹم ۔یہ نوکیا کا پہلا ہینڈ سیٹ ہے جس میں اینڈرائڈ آپریٹنگ سسٹم استعمال کیا گیا ہے۔اب کون یہ سوچ سکتا تھا کے سمارٹ فون جائنٹ نوکیا اپنے  آپریٹنگ سسٹم ونڈوز کو چھوڑ دے گا۔  آخر ایسی کون سی وجہ یا مجبوری تھی کے نوکیا نے یہ قدم اٹھایا؟ میرے خیال میں اینڈرائڈ کی بڑھتی ہوئی مقبولیت اور کامیابی کے بعد نوکیا کے پاس اور کوئی آپشن نہیں بچی تھی۔ایکس سیریز نوکیا کی پہلی اینڈرائڈ سیریز ہے اور سب  اس کا نتیجہ جاننا چاہتے ہیں ،یہ کامیاب ہوتا ہے یا ناکام؟ خیر یہ تو وقت ہی بتائے گا۔نوکیا ایکس کم قیمت فون ہے جو اسکی شہرت کی ایک اور بڑی وجہ ہے ،نوکیا اسکے  کے بارے میں کافی پر امید ہے۔

ڈیزائن

پہلی چیز جو آپ کسی فون میں دیکھتے ہیں وہ ہے اسکی لُک اور ڈیزائن ۔جہاں تک نوکیا ایکس کا تعلق ہے یہ  اپنے رنگوں کی وجہ سے بہت  دلکش لگتا ہے۔آپ اسکا بیک کور جب چاہے بدل سکتے ہیں ۔اسکے ڈایمنشنز سے آپ کو اسکے سائز کا اندازہ ہو گا۔ یہ 128 گرام کا ایک چوکور فون ہے۔ اسکے پیچھے کی طرف 3.2 میگا پکسل کا کیمرہ نسب ہے ۔دائیں جانب دو آواز کنٹرول کرنے والے بٹن ہیں۔انہیں کے نیچے ایک پاور بٹن ہے ۔اسکے علاوہ سکرین کے بلکل نیچے ایک مشترکہ ہوم ، بیک بٹن ہے۔یہ کافی اچھے انداز میں ڈیزائن کیا گیا ہے  ۔اسکا ڈیزائن ایپل کے آئی فونز سے ملتا جلتا ہے۔اگر ہم اسکا پچھلا شیل اتار کر دیکھیں تو ہمیں اند ایک رموایبل بیٹری ،دو مائیکرو سم سلوٹ  اور مائیکرو  ایس ڈی کارڈ سلوٹ ملے گا۔

سافٹ وئر اینڈ ہارڈوئر

نوکیا ایکس کے مشہور ہونے اور سب کی نظروں کا مرکز بننے کی صر ف ایک ہی وجہ ہے اور وہ وجہ ہے اینڈرئیڈ آپریٹنگ سسٹم لیکن یہ بھی حقیقت ہے کہ اس میں آپ کو اینڈرئیڈ اپنی اصلی حالت میں نہیں ملے گا۔نوکیا اور مائیکروسافٹ نے کافی محنت کے بعد اینڈرائیڈ کی شکل تبدیل کی ہے۔سو آپ کو اس سیٹ میں اینڈرئیڈ سے  بلکل الگ انٹر فیس دیکھنے کو ملے گا۔نوکیا نے اس میں ایک نئی چیز فاسٹ لین کے نام سے متعارف کروائی ہے ۔فاسٹ لین میں نوٹیفیکشن اور موبائل فون کی ہسٹری ہوتی ہے ۔آپ ہوم سکرین کو سوائپ کر کے فاسٹ لین تک رسائی حاصل کر سکتے ہیں ۔
نوکیا ایکس کی  ہارڈوئر کی تفصیل آپ یہاں سے دیکھ سکتے ہیں۔

استعمال

اس وقت نوکیا ایکس میرے سامنے پڑا ہے اور میں اسے قریباً تین ہفتوں سے استعمال کر رہا ہوں۔اس کی سکرین ایک اچھی فنگر پرنٹ میگنٹ ہے لیکن ملائم اور سموتھ نہیں جتنی کہ آپ آج کل کے سمارٹ فونز سے  توقع کرتے ہیں مگر یہ حقیقت ہے جو ہمیں ماننی ہی پڑے گی کے ایک عام یوزر کیلئے یہ ایک بہت ہی اچھا اور آرام دہ فون ہے ۔اسکی ہوم سکریں ہر طرح سے تبدیل کی جاسکتی ہے  مثلاً آپ آئی کونز کی جگہ اور سائز تبدیل کر سکتے ہیں،نیا فولڈر بنا سکتے ہیں  اور ایپلیکیشنز کو ڈائرکٹ ہوم سکرین سے ڈیلیٹ کر سکتے ہیں۔اس اینڈرائڈ  کی خاص یا شاید عجیب بات یہ ہے کہ یہ گوگل پلے کے بغیر ہے ۔اس میں نوکیا کا اپنا سٹور ہے جہاں سے آپ اینڈرائڈ  ایپلی کیشنز  ڈاونلوڈ کر سکتے ہیں ۔اس کے علاوہ آپ کے پاس ہمیشہ سے ہی آپشن ہے کو آپ کوئی دوسرا سٹور جیسے ون موبائل مارکیٹ وغیرۃ استعمال کر سکتے ہیں  اور ‘اے پی کے ‘فائل کی صورت میں ڈائرکٹ ایپلیکیشنز بھی ڈاونلوڈ کر سکتے ہیں۔ جہاں تک بیمز کا تعلق ہے اس پر گیمنگ کا تجربہ ٹھیک ہی رہا لیکن آپ اس سے زیادہ اچھی پر فارمنس کی امید نہیں رکھ سکتے۔اسکا کیمرہ بھی اوسط درجہ کا ہے۔

حرفِ آخر

تویہ تھی نوکیا کی اینڈرائیڈ   کہانی  ۔نوکیا نے آپریٹنگ سسٹم سے گوگل کی چھاپ ہٹانے کی ہر ممکن کوشش کی اور اس کو اپنے  روایتی سانچے میں ڈھالنے  کیلئے ہر طریقہ اپنایا۔یہ فون “اے او ایس پی” سورس کوڈ پر مبنی  ہےجس کی بدولت اس کے انٹردیس میں بہت سی تبدیلیاں کی گئی ہیں۔ نوکیا ایکس ایک اوسط درجہ کا ایک اچھا فون ہے لیکن آپ کو اس سے معجزات کی امید نہیں رکھنی چاہیے  کیوں کے نوکیا اتنی قیمت پر کچھ اور کرنے کو تیار نہیں۔

نوکیا ایکس کی تفصیلی فیچرز اور سپکس دیکھنے کیلئے  یہاں کلک کریں۔